Wednesday, 4 January 2017

مولانا محمد شفیع اوکاڑوی کا ادبی سرقہ



مولانا محمد شفیع اوکاڑوی نے اپنی کتا ب ''ذکر جمیل'' جو کہ پیارے نبی حضرت محمد ﷺ کی سیرت کے بارے میں ہے ، ایک فارسی شعر کو علامہ اقبال کی طرف منسوب کر کے لکھا ہے لیکن اصل میں وہ علامہ اقبال کا لکھا نہیں بلکہ حضرت مسیح موعود اور امام مھدی مرزا غلام احمد قادیانی علیہ السلام کی کتاب براھین احمدیہ سے لیا گیا ہے ، وہ فارسی شعر یہ ہے 'مصطفیٰ آئینۂ روئے خداست , منعکس دروے ہماں خوئے خداست' اس کا اردو ترجمہ یہ ہے کہ ' مصطفیٰ تو خدا کے چہرہ کے آئینہ ہیں ، ان میں خدا کی صفات منعکس ہیں ' یہ ہے وہ خوبصورت کلام جو عشق رسول کی ایک بہترین مثال ہے ، لیکن افسوس کہ مولوی صاحب نے صرف دنیا سے خوف کر کے اس شعر کے لکھنے والے کا نام نہیں لیا اور اقبال کا نام لکھ کر سیرت نبوی کے نیک کام میں بھی جھوٹ سے کام لیا ۔




2 comments:

A. Jamil Tayyeb نے لکھا ہے کہ

جزاکم اللٰہ

Ahmadi Muslim نے لکھا ہے کہ

سرقہ سے متعلق مزید حوالہ جات کے لیے مولانا دوست محمد شاہد کی کتاب بیسویں صدی کا علمی شاہکار دیکھی جا سکتی ہے
https://archive.org/download/20thCenturyElmiShahkar/20th-century-ilmi-shahkar.pdf

اگر ممکن ہے تو اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔