Wednesday, 21 January 2015

اشتہار ''مولوی ثناءاللہ صاحب کے ساتھ آخری فیصلہ'' مباہلہ یا دعا ؟

حضرت مسیح موعود مرزا غلام احمد قادیانی علیہ السلام نے 15 اپریل 1907 ء کوایک اشتہار'' مولوی ثناءاللہ صاحب کے ساتھ آخری فیصلہ'' کے عنوان سے دیا ، جس کے مخاطب جیسا کہ نام سے ظاہر ہے اہلِحدیث کے مولانا ثناءاللہ امرتسری صاحب تھے ، اب اس اشتہار کو لے کر دیوبندی اور اہل حدیث جو جھوٹ بولتے ہیں اس کا ایک اہم ثبوت یہاں آپ کو دکھانا مقصود ہے ، دیوبندی اس اشتہار کو نقل کر کے اس کو صرف دعا قرار دیتے ہیں ( محمدیہ پاکٹ بک ، صفحہ ۵۸۲ )



اور دوسری طرف اہلِ حدیث اس اشتہار کو مباہلہ قرار دے کر مولوی ثناءاللہ امرتسری صاحب کو فاتح قادیان کا خطاب دیتے ہیں ، جبکہ یہ بات نہیں بتاتے کہ مولوی ثناءاللہ صاحب نے صاف انکار کردیا تھا اس مباہلہ سے ۔
'' قادیانی متنبیّ مرزا غلام احمد نے ۱۵ / اپریل ۱۹۰۷ کو مباہلہ کا اشتہار شائع کیا جس کا عنوان تھا : مولوی ثناءاللہ  کے ساتھ آخری فیصلہ۔۔ ''
( تذکرہ ابو الوفاء ، ص : ۹۶ )  ( برھان التفاسیر ، صفحہ ۲۵ )



مکمل تفصیل اور جواب کے لیے یہاں جائیں۔

0 comments:

اگر ممکن ہے تو اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔